اہم ترین سیاستدانوں کی قومی اسمبلی کے اجلاسوں میں حاضری کی صورتحال بدترین !

12

اسلام آباد ۔جون 2013 سے اب تک قومی اسمبلی کا اجلاس مجموعی طور پر 383 دن چلا ، لیکن اہم ترین سیاستدانوں کی قومی اسمبلی کے اجلاسوں میں حاضری کی صورتحال بدترین رہی ، منتخب عوامی نمائندوں میں سے تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے صرف 22 دن قومی اسمبلی کی یاترا کی، سابق وزیر ا علٰی سندھ علی محمد خان مہر صرف 15 دن اسمبلی اجلاس میں آئے ، وزیر ا علٰی پنجاب کے فرزند حمزہ شہباز صرف 30 دن، آصف علی زرداری کی ہمشیرہ فریال تالپور 36 دن، جبکہ وزیر اعظم نواز شریف 61 دن ایوان میں جلوہ افروز ہوئے ، اپوزیشن لیڈر خورشید شاہ کا حاضری کا ریکارڈ کئی ارکان سے بہتر رہا ہے ۔ روزنامہ دنیا کے " فافن"  سے اسمبلی کے ا ہم ترین ارکان کے جون 2013 سے اب تک کے حاصل کئے گئے حاضری ریکارڈ کے مطابق قومی اسمبلی کا اجلاس مجموعی طور پر 383 دن تک جاری ر ہا ، جس میں وزیر اعظم نواز شریف کل 61 دن قومی اسمبلی کے اجلاس میں آئے ، وزیر اعظم 322 دن اسمبلی سے غیر حاضر ر ہے ، اس طرح وزیر اعظم کی حاضری کی شرح 16 فیصد رہی ، تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے اسمبلی کے قیام کے آٹھ دن بعد حلف اٹھایا تھا، جس کے بعد اسمبلی کا اجلاس مجموعی طور پر 375 دن چلا ہے ، لیکن عمران خان صرف 22 دن اجلاس میں شریک ہوئے ، کپتان 353 دن اسمبلی اجلاسوں سے غیر حاضر ر ہے ، اس طرح کپتان کی حاضری کی شرح 6 فیصد ر ہی ، اپوزیشن لیڈر خورشید شاہ 383 دن میں سے 281 دن حاضر اور 102 دن غیر حاضر ر ہے ، خورشید شاہ کی حاضری کا تناسب 73 فیصد ر ہا ، جو دیگر سیاستدانوں سے بہت بہتر ہے ، وزیر داخلہ چودھری نثار علی 383 دن میں سے 169 دن حاضر جبکہ 214 دن غیر حاضر ر ہے ، ان کی حاضری کی شرح 44 فیصد ر ہی ، وزیر دفاع خواجہ آصف 181 دن حاضر جبکہ 202 دن غیر حاضر ر ہے ، ان کی حاضری کی شرح 47 فیصد ر ہی ، وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق 188 دن حاضر اور 195 دن غیر حاضر ر ہے ، سعد رفیق کی حاضری کی شرح 49 فیصد ر ہی ، شاہ محمود قریشی 182 دن حاضر جبکہ 200 دن غیر حاضر ر ہے ، ان کی حاضری کی شرح 48 فیصد ر ہی۔ اسمبلی میں حاضری کا سب سے بدترین ریکارڈ پیپلز پارٹی کے علی محمد مہر ، حمزہ شہباز اور فریال تالپور کا رہا ، علی محمد مہر صرف 15 دن اسمبلی میں آئے اور 368 دن غیر حاضر ر ہے ، ان کی حاضری کی شرح صرف 4 فیصد ر ہی ، حمزہ شہباز 30 دن حاضر ر ہے اور باقی 353 دن غیر حاضر ر ہے ان کی حاضری کی شرح 8 فیصد ر ہی ،فریال تالپور صرف 36 دن ایوان میں آئیں، باقی 347 دن ایوان سے غائب ر ہیں ، فریال تالپور کی حاضری کی شرح 9 فیصد ر ہی ، فریال تالپور کے شو ہر میر منور تالپور 118 دن حاضر جبکہ 264 دن غیر حاضر ر ہے ، منور تالپور کی حاضری کی شرح 31 فیصد ر ہی ، جے یو آئی کے سربراہ مولانا فضل الرحمن 381 دن میں سے صرف 95 دن اسمبلی میں آئے ، باقی 286 دن غیر حاضر رہے ، مولانا کی حاضری کی شرح 25 فیصد ر ہی ، اپوزیشن لیڈر خورشید شاہ کی طرح محمود خان اچکزئی اور شیخ رشید کی حاضری کا ریکارڈ بھی بہتر رہا ، شیخ رشید 241 دن حاضر جبکہ 142 دن غیر حاضر ر ہے ، شیخ رشید کی حاضری کا تناسب 63 فیصد ر ہا ، اسی طرح محمود خان اچکزئی 309 دن حاضر اور 74 دن غیر حاضر ر ہے ، اچکزئی کی حاضری کی شرح 81 فیصد ر ہی:۔ !

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *