پاکستان کے ساحلی علاقوں کی سیٹلائٹ تصاویر نے سائنسدانوں کو حیرت میں مبتلا کردیا!

کراچی -پانی میں ’کائی‘کا اگ آنا کوئی اچنبھے کی بات نہیں لیکن پاکستان کے ساحل پر بحیرہ عرب میں یہ کائی اتنی بڑی مقدار میں اگ آئی ہے کہ ماہرین بھی چکرا کر رہ گئے ہیں۔ ویب سائٹ sciencealert.com کی رپورٹ کے مطابق یہ پاکستان کے ساحلوں کے قریب اگنے والی یہ کائی کئی سو کلومیٹر تک پھیلی ہوئی ہے۔ ماہرین اس کی وجہ خلیج عمان میں بڑھتے ’ڈیڈزون‘ کو قرار دے رہے ہیں۔یہ کائی عمان کے ساحلوں سے شروع ہوتی ہے اور پاکستان سے ہوتی ہوئی بھارتی ساحلوں تک اگ آئی ہے۔ 

ناسا کے سائنسدان اتنی بڑی مقدار میں کائی دیکھ کر ششدر ہیں اور ان کا کہنا ہے کہ کبھی بھی سمندر میں اتنی بڑی مقدار میں کائی پیدا ہوتے نہیں دیکھی گئی۔یہ چیز مقامی ایکوسسٹم کے لیے کوئی اچھا اشارہ نہیں ہے۔ سائنسدانوں کے مطابق سمندر کے اس علاقے میں کائی اتنی بڑی مقدار میں موجود ہے کہ اسے خلاءسے بھی بخوبی دیکھا جا سکتا ہے۔ خلاءسے لی گئی تصاویر میں سمندر کے اس حصے کا رنگ سبز ہو چکا ہے، جس کی وجہ یہ کائی ہے۔اس کے خطرناک نتائج برآمد ہو سکتے ہیں کیونکہ اس سے امونیا اتنی بڑی مقدار میں خارج ہو سکتی ہے کہ علاقے میں سمندری حیات کا خاتمہ ہو جائے گا :-

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *