مرنے والے خاکروب عرفان مسیح کا پیغام

زریاب شیخ

Image may contain: 1 person, standing and outdoor

میں عمر کوٹ کا ایک خاکروب عرفان مسیح ہوں میرا جرم یہ ہے آپ کی گندگی کی وجہ سے جو گٹر بند ہوگیا اسے صاف کرتے ہوئے میں دم گھٹنے سے بے ہوش ہوگیا جب مجھے گندگی سمیت ہسپتال لایا گیا تو تین ڈاکٹروں نے مجھے ہاتھ لگانے سے انکار کردیا ایک ہندو تھا دو مسلمان تھے میں آخری سانسیں لے رہا تھا اور وہ کہہ رہے تھے کہ اس کو پہلے نہلاؤ پھر ہم ہاتھ لگائیں گے اور میں ان کی کوتاہی کی وجہ سے سسک سسک کر دم توڑ گیا -

Image may contain: 1 person, close-up

میں ایک انسان ہوں ایک مزدور بھی ہوں میرے بھی بیوی بچے ہیں جو یتیم ہو چکے میں تو مر گیا میرا جرم کیا تھا کہ میں گٹر صاف کرنے والا ہوں دنیا سے تو چلا گیا لیکن مرنے کے بعد اللہ سے ضرور کہوں گا کہ جن لوگوں کی گندگی میرے جسم پر لگی تھی انہوں نے ہی مجھے ہاتھ نہیں لگایا مجھے مرتا چھوڑ دیا مجھے انصاف دے مجھے انصاف دے قیامت والے دن میدان حشر میں اس رب کے سامنے میں ہوں گا اور وہ تین ڈاکٹر ہوں گے اور ساری پاکستانی عوام ہوگی-

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *