فرانس میں ملکہ حسن کے مقابلے میں دوم آنے والی لڑکی نے داعش جوائن کرلی

لائی تیتیا نے مارچ 2016 میں اسلام قبول کرکے اپنا نام کنزہ رکھا۔ فوٹو: فائل

مغربی ممالک سے کئی لڑکیاں داعش سے متاثر ہوکر اس میں شمولیت اختیار کر رہی ہیں لیکن فرانس سے  تازہ ترین خبر یہ ہے کہ ملکہ حسن نے بھی داعش میں شمولیت اختیار کر لی ہے- تفصیلات کے مطابق26 سالہ لتیشیا جو کہ 2014میں "مس کارنن" کے مقابلے میں دوسری پوزیشن پر آئی تھی اس نے بھی داعش میں شمولیت اختیار کر لی ہے- ایک ویب سائٹ کے مطابق لتیشیا نہ صرف خود داعش کا حصہ بنی ہے بلکہ دوستوں کو بھی اس میں شامل ہونے کی ترغیب دیتی رہی ہے-لتیشیا نے ایک سال قبل اسلام قبول کیا تھا اور اس کا اسلامی نام کنزہ رکھا گیا تھا-پولیس نے اس کے فلیٹ پر چھاپا مارا تو وہاں سے کافی زیادہ تعداد میں داعش سے متعلق مواد برآمد ہوا- لتیشیا(کنزہ) کی ماں کا کہنا ہے کہ اس کی بیٹی نشے کی لت میں پڑ گئی تھی اور تنزانیہ کے ایک انتہا پسند مسلمان کے ساتھ رابطے میں تھی- یاد رہے کہ اسلام قبول کرنے اور داعش میں شمولیت سے پہلے لتیشیا ماڈلنگ بھی کرتی رہی ہے-

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *