عمران خان کی بہن نے دوبئی میں مہنگا فلیٹ کیسے خریدا؟ نیب نے نوٹس جاری کردیا

لاہور: (روزنامہ دنیا) دبئی حکام کی جانب سے 100 پاکستانیوں کے دبئی کے مہنگے علاقوں میں فلیٹس کی تصدیق پر ایف بی آر نے فلیٹ مالکان سے منی ٹریل طلب کر لی۔ اثاثوں میں مہنگے تحائف ظاہر کرنے والوں سے بھی تفصیلات طلب کر لی گئیں۔ایف بی آر نے مریم نواز، علی ترین، علی فاروق ڈار اور نجم سیٹھی سمیت 260 افراد کو ملنے والے مہنگے تحائف بارے نوٹس جاری کر دیئے۔

ایف پی آر نے دبئی حکام سے پاکستانیوں کے بارے میں تفصیلات طلب کی تھیں۔ سو فلیٹ مالکان میں اہم افراد شامل ہیں،جن میں عمران خان کی بہن علیمہ خانم، محمود مانڈوی والا ، عبداللہ ہاشوانی ،عبداللہ قدوانی بھی ہیں ،عمران کی بہن کا فلیٹ ڈی ایم لافٹس ٹی ایسٹ 14-1406 پر واقع ہے ،محمود مانڈوی والا کا فلیٹ فیز1 18-1803 پر واقع ہے ،عبداللہ قدوانی کا فلیٹ برج دبئی لیک ہوٹل 53-5304 پر واقع ہے ،عبداللہ ہاشوانی ،محمد خالد عمران ، نجیب الرحمن ، ماریہ مریم ،انیسہ فاروقی سمیت تمام لوگوں سے تفصیلات طلب کر لی گئیں۔

ایف بی آر ذرائع کے مطابق عمران کی بہن کے مطابق فلیٹ 2008 میں خریدا اور 2017 میں فروخت کر دیا جس پر ایف بی آر نے ان سے خرید و فروخت کا ریکارڈ مانگ لیا اور 5 مارچ کی ڈیڈ لائن دی، جواب نہ دینے پر انکے گھر کے باہر ایف بی آر کا نوٹس چسپاں کر دیا گیا۔ باقی تمام مالکان سے بھی ریکارڈ طلب کر لیا گیا۔ اس کے علاوہ ایف بی آر نے سال2016،17 کے دوران انکم ٹیکس گوشواروں میں کروڑوں کے گفٹ ظاہر کرنے والوں کے خلاف بھی کارروائی کا عمل تیز دیا۔ کارپوریٹ ریجنل ٹیکس آفس میں رجسٹرڈ 260 افراد نے کروڑوں کے گفٹ ظاہر کر رکھے ہیں، تمام ریجنل ٹیکس دفاتر کو تحقیقات کیلئے 5 اپریل کی ڈیڈ لائن دی گئی ہے۔

مریم صفدر نے 17کروڑ20 لاکھ کے گفٹ ظاہر کئے ، جو ان کے والد نواز شریف کی طرف سے دینا ظاہر کیا گیا ہے۔ نجم سیٹھی نے ایک کروڑ 6 لاکھ 17 ہزار روپے کے گفٹ ظاہر کر رکھے ہیں۔ ایم این اے روحیل اصغر شیخ نے ایک کروڑ 80 لاکھ روپے کے گفٹ ظاہر کررکھے ہیں، گوہر ایوب خان نے 3 کروڑ53 لاکھ روپے اور وصال احمد منوں نے 9 کروڑ81 لاکھ 46 ہزار روپے کے تحائف ظاہر کر رکھے ہیں۔ ایف بی آر نے تحائف دینے اور لینے والے تمام ا فراد کے ٹیکس معاملات کی چھان بین شروع کر رکھی ہے۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *