فیس بک: مارک زکربرگ کی جانب سے نئی تبدیلیوں کا اعلان

فیس بک کے بانی مارک زکربرگ نے کہا ہے کہ وہ انسٹا گرام اور واٹس ایپ سمیت فرم کے پورٹ فولیو میں شامل سوشل پلیٹ فارمز میں متعدد تبدیلیاں لا رہے ہیں۔

ایپس کے نئے ڈیزائن اور خصوصیات کمپنی پر صارفین کے ڈیٹا کی حفاظت کے سلسلے میں بڑے پیمانے پر کی جانے والی تنقید کا نتیجہ ہیں۔

زکربرگ کہتے ہیں کہ ان کی کمپنی صارفین کی پرائیویسی کو اولین ترجیح دے گی۔

انھوں نے اس بات کو تسلیم کیا کہ ابھی صارفین کے اعتماد کو بحال کرنے کے لیے بہت کچھ کرنے کی ضرورت ہے۔

ڈیویلپرز سے تقریر کے دوران مارک زکر برگ نے کہا کہ کمپنی کی پرائیویسی پر توجہ مرکوز ہونا کمپنی چلانے کے طریقے میں بڑی تبدیلی کی عکاسی کرتا ہے۔

صارفین کے لیے فرم کی جانب سے اپنے پراڈکٹس میں کی جانے والی تبدیلیاں مندرجہ ذیل ہیں:

  • میسنجر پر بھیجے جانے والے پیغامات اب پہلے سے اینڈ ٹو اینڈ اِنکریپٹڈ ہوں گے مطلب فیس بک اب دو لوگوں یا گروپس کے درمیان ہونے والی بات چیت کو دیکھ نہیں سکے گی اور پلیٹ فارم واٹس ایپ کے ساتھ مکمل طور پر ضم ہو گا۔
  • انسٹا گرام نے تجرباتی طور پر ایک نیا فیچر متعارف کروایا گیا ہے جس میں کسی بھی تصویر پر لائیکس کی تعداد دیگر افراد تو نہیں دیکھ سکیں گے مگر اکاؤنٹ کا مالک اسے دیکھ سکے گا۔
  • اب پیغامات میں مواد شیئر کرنے کے لیے زیادہ عارضی طریقے ہوں گے۔ اس کا مطلب ہے کہ وہ پیغامات مستقل بنیادوں پر ریکارڈ کا حصہ نہیں بنیں گے۔
  • انڈیا میں واٹس ایپ پر ادائیگی کے محفوظ سسٹم کو رواں سال دنیا کے دیگر ملکوں میں بھی متعارف کروایا جائے گا۔
  • فیس بک کمیونٹی گروپس کو نیوز فیڈ میں مرکزیت دینے کے لیے اپنے نیلے رنگ کو ترک کر کے اب ایک نئے ڈیزائین کے ساتھ سامنے آئے گی لیکن پہلے برانڈنگ صرف امریکہ میں کی جائے گی۔
  • انسٹا گرام پر نئے ’کریئیٹ‘ فیچر کی بدولت اب پوسٹس میں فوٹو یا ویڈیو ڈالنا ضروری نہیں ہے۔ صارفین اب صرف ٹیکسٹ یا سٹیکرز شیئر کر سکیں گے۔
FACEBOOK

حالیہ پرائیویسی سکینڈلز سے متعلق زکر برگ نے کہا کہ وہ جانتے ہیں اس حوالے سے کمپنی کی پوزیشن مضبوط نہیں ہے۔

تاہم انھوں نے کہا کہ فیس بک پوری کمپنی کے انفراسٹرکچر میں پرائیویسی کو بہتر کرنے کی کوشش کر رہی ہے لیکن یہ راتوں رات نہیں ہو سکتا اور واضح رہے کہ ابھی ان کے پاس تمام سوالوں کے جواب نہیں ہیں۔

اس سے قبل انھوں نے کہا تھا کہ وہ سمجھتے ہیں کہ لوگ مستقبل میں نجی سطح پر چھوٹے گروپس میں بات چیت کرنا چاہیں گے۔ تاہم کچھ لوگوں کا خیال تھا کہ پہلے مارک زوکر برگ کو عوام کو قائل کرنا ہو گا کہ فیس بک ہی وہ پلیٹ فارم ہے جہاں لوگ ایسا کر سکیں گے۔

ایک سوشل میڈیا کنسلٹنٹ میٹ نوارا کہتے ہیں کہ ایک بڑا سوال یہ ہے کہ فیس بک سنہ 2019 اور اس سے آگے سوشل میڈیا پر عائد کیے گئے قوانین کی پاسداری کس انداز میں کرے گا۔

شمالی امریکہ میں بی بی سی کے نامہ نگار ڈیو لی کے مطابق مارک زکر برگ نے فیس بک کے مستقبل کے بارے میں پہلے بھی کہا تھا 'پرائیویٹ، پرائیویٹ، پرائیویٹ' لیکن اب زکربرگ نے بہت سی تفصیلات بھی پیش کی ہیں۔

گذشتہ پانچ سالوں میں ڈیزائن کے حوالے سے یہ سب سے بڑی تبدیلی ہے۔ یہ تبدیلیاں گروپس، نجی بات چیت اور اِنکریپٹڈ پیغامات پر زور دے رہی ہے جس کی رسائی خود فیس بک کو بھی نہیں حاصل ہو گی۔

بڑی خبر یہ ہے کہ فیس بک اب نیلا نہیں رہے گا اور زکر برگ فیس بک کو آئی میسیجز جیسا بنانے کا سوچ رہے ہیں۔

فیس بک

سیکرٹ کرش

فیس بک میں 'سیکرٹ کرش' کے نام سے ایک نیا فیچر متعارف ہوا ہے کو کہ فیس بک ڈیٹنگ کا حصہ ہے اور اس فیچر کی بدولت کچھ ممالک میں موجود صارفین کو اپنے نو دوستوں کو، جنھیں وہ پسند کرتے ہوں، ٹیگ کر سکتے ہیں۔

اگر کرش فیچر استعمال کرنے والے دو صارفین ایک دوسرے کو ٹیگ کریں گے تو دونوں صارفین کو ’ایک دوسرے کے ساتھ میچ‘ ہونے کا پیغام موصول ہو گا۔

فیس بک کا ڈیٹنگ آپشن جلد 14 ممالک میں شروع ہو گا جن میں فلپائن، ویتنام اور سنگا پور شامل ہیں جبکہ فی الوقت یہ فیچر یورپ اور امریکہ میں بھی موجود نہیں ہے۔

ورچوئل ریئلیٹی

کمپنی نے اپنے نئے وائرلیس ورچوئل ریئلیٹی ہیڈ سیٹ ’اوکیولس کویئسٹ‘ کو 21 مئی کو ریلیز کرنے کا اعلان کیا۔ اس ہیڈ سیٹ کو بغیر پی سی، سمارٹ فون یا گیم کنسول کے استعمال کیا جا سکے گا۔

اس موقع پر مارک زکر برگ نے اعلان کیا کہ کانفرنس میں شرکت کرنے والے ہر شخص کو یہ ہیڈ سیٹ مفت دیا جائے گا۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *