جسمانی توانائی کو برقرار رکھنے میں مددگار آسان طریقہ

کیا آپ کو ہر وقت ایسا لگتا ہے کہ نیند کی کمی کی وجہ سے جسم توانائی سے محروم ہوگیا ہے تو بس کچھ منٹ کے لیے سیڑھیاں چڑھنا عادت بنالیں۔

یہ دعویٰ یونان میں ہونے والی ایک طبی تحقیق میں سامنے آیا۔

ایتھنز کی جارجیا یونیورسٹی کی تحقیق میں بتایا گیا 10 منٹ کے لیے سیڑھیاں چڑھنا جسم کو سوڈا یا کافی میں موجود کیفین سے زیادہ توانائی فراہم کرسکتا ہے۔

تاہم یہ جسمانی توانائی کچھ وقت کے لیے ہوتی ہے اور بہت زیادہ تھکاوٹ کی شکل میں دن بھر میں کئی بار اس عمل کو دہرانا طویل المعیاد بنیادوں پر جسمانی توانائی کو یقینی بناسکتا ہے۔

تحقیق کے مطابق بیشتر افراد نیند کی کمی کے نتیجے میں جسمانی توانائی سے محروم ہوجاتے ہیں، تو ان کے لیے بہت آسان ہے کہ وہ سیڑھیاں چڑھنے کو عادت بناکر اس مسئلے کو کم کرسکتے ہیں۔

اس تحقیق کے نتائج طبی جریدے جرنل فزیولوجی اینڈ بی ہوئیر میں شائع ہوئے۔

گزشتہ سال امریکا میں ہونے والی ایک طبی تحقیق میں بتایا گیا تھا کہ سیڑھیاں چڑھنے کی عادت ہائی بلڈ پریشر کو معمول پر لانے کے ساتھ ساتھ درمیانی عمر کے افراد کی ٹانگوں کو بھی مضبوط بناتی ہے۔

تحقیق میں بتایا گیا کہ درمیانی عمر کی خواتین کے ہارمونز کے نظام میں تبدیلیوں سے عضلاتی اور مسلز کے مسائل کا خطرہ بڑھتا ہے، تاہم سیڑھیاں چڑھنا عادت بناکر ورزش کے فوائد حاصل کیے جاسکتے ہیں۔

تحقیق میں یہ بھی بتایا گیا کہ اس عادت کے نتیجے میں خون کی شریانوں میں ہی بہتری نہیں آتی بلکہ بلڈ پریشر میں کمی اور شریانوں کی اکڑن کم ہوتی ہے، شریانوں پر چربی کم ہوتی ہے، ہڈیوں کا بھربھرا پن جیسا مرض بھی دور ہوتا ہے۔

تحقیق کے مطابق طرز زندگی میں ایک معمولی سی تبدیلی جیسے سیڑھیاں چڑھنا عمر بڑھنے سے عضلاتی نظام اور ٹانگوں کے مسلز پر مرتب ہونے والے منفی اثرات کو کم کرنے میں مدد دیتا ہے۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *