پرل کانٹی نینٹل اور آواری کے باورچی خانوں کی حالت زار: پنجاب فوڈ اتھارٹی کی جانب سے بھاری جرمانہ

pc awariلاہور کے دو بڑے ہوٹلوں، پرل کانٹی نینٹل اور آواری، پر پنجاب فوڈ اتھارٹی کی ٹیم کے چھاپے کے دوران دونوں ہوٹلوں کے باورچی خانوں میں غیر معیاری، زائد المیعاد اور ناقص چیزوں کی موجودگی کی وجہ سے انہیں بھاری جرمانہ کیا گیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق ڈائریکٹر آپریشنز عائشہ ممتاز کی سرکردگی میں فوڈ اتھارٹی کی ٹیم نے پرل کانٹی نینٹل نے چھاپہ مارا تو ان کے بیکری سیکشن سے مس برانڈڈ جام، زائد المیعاد کیک، بنا کسی لیبل کے فوڈ فلیورز، ٹوٹے ہوئے انڈوں جیسی چیزیں ملیں۔ ’’دم پخت‘‘ کے کچن میں بچا کھچا کھانا رکھا ہوا تھا اور یہاں سینی ٹیشن کی صورت حال بھی مخدوش تھی۔ اسی طرح ایک اور کچن میں ہاتھوں کو جراثیم سے محفوظ رکھنے کے لیے کوئی شے نہ تھی اور نہ ہی برتن دھونے کا صابن دستیاب تھا۔ مجموعی طور پر پی سی ہوٹل پر پچھتر ہزار روپے جرمانہ عائد کیا گیا ہے۔
آواری میں بھی اس سے ملتی جلتی صورت حال نظر آئی۔ فوڈ اتھارٹی کی ٹیم نے یہاں بھی بیکری سیکشن میں بنا کسی ایکسپائری تاریخ والی چیزیں استعمال کرنے پر جرمانہ عائد کیا۔ اس کے علاوہ’’الا کارٹے‘‘کچن میں بچا کھچا کھانا اور گندی پلیٹیں پڑی تھیں، ’’ڈائنیسٹی‘‘ کے کچن میں چولہے گندے اور صفائی کا مناسب انتظام نہ ہونے کی وجہ سے جرمانہ عائد کیا گیا۔ یہاں بھی فوڈ اتھارٹی کی ٹیم نے مجموعی طور پر merg pic

پچھتر ہزار روپے کا جرمانہ عائد کیا ہے۔
فوڈ اتھارٹی کی ٹیم نے مزید کارروائیوں میں حافظ سویٹس رائے ونڈ روڑ اور برگر کارنر گلبرگ کو بھی سیل کر دیا ہے۔ دونوں جگہوں سے غیر معیاری اشیائے خور و نوش ملی تھیں۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *