متحدہ پھر استعمال ہو گئی۔۔۔؟

ghulam abbas shah 1متحدہ کے پارلیمنٹ کو خیرباد کہنے کے بعد پیدا ہونے والا سیاسی بحران مزید بڑھنے کو جا رہا ہے؟ سیاسی شطرنج پر ایم کیو ایم نے جو چال چلی یا ان سے چلوائی گئی۔ اس سے جوڈیشل کمیشن کے بعد کمزور ہونے والی تحریک انصاف مضبوط ہوئی ۔۔ کہیں ایسا تو نہیں کراچی آپریشن کو جواز بنا کر پارلیمنٹ چھوڑنے والی متحدہ قومی موومنٹ ایک بار پھر استعمال ہوگئی۔ قومی اسمبلی میں 24،سینٹ میں 8،سندھ اسمبلی میں 51اراکین رکھنے والی جماعت کے اراکین جب قومی اسمبلی میں مستعفیٰ ہونے کے لئے پہنچے تو تحریک انصاف کے برعکس سپیکر نے فوری استعفوں کی منظوری کا عمل شروع کیا۔ منگل کی شب ایم کیو ایم کے قائد الطاف حسین کی جانب سے تقریر کے بعد جب پارلیمنٹ کو خیرباد کہنے کا فیصلہ کیا تو اس کے چند گھنٹوں بعد عمران خان کا پارلیمنٹ میں جانے کو این اے 122سے مشروط کرنا محض اتفاق نہیں لگتا۔۔ ایم کیو ایم کے استعفوں کے پس پردہ کہانی کچھ اور لگتی ہے۔۔ کہیں ایسا تو نہیں ہونے جا رہا کہ قومی ،صوبائی اسمبلی اور سینٹ 83سیٹیں خالی ہونے کے بعد ضمنی انتخابات کروانے کے90روز کے اندر تحریک انصاف بھی ایسا ہی کچھ کرے اور قومی اسمبلی ،سینٹ اور صوبائی اسمبلیوں کو خیرباد کہنے سے پارلیمنٹ اپنی اخلاقی حیثیت کھو دے۔۔ اسے سے جہاں پارلیمنٹ کے غیر موثر ہونے کے عمران خان کے دعوے کو تقویت ملے گی وہیں ضمنی انتخاب سے ری الیکشن کا مطالبہ بھی زور پکڑے گا ۔۔ یہ بات تو صاف ہے کہ ایم کیو ایم کی جانب سے پارلیمانی سیاست سے باہر ہونے کے بعد کراچی آپریشن میں کمی کی بجائے مزید تیزی آئے گی اور بظاہرزمینی حالات کی تبدیلی کے بعد متحدہ اپنا موقف اپنے لوگوں تک پہنچنے میں بھی مشکلات سے دوچار ہوگی ۔ تو بلاشبہ اس کا فائدہ کسی اور کو ہی ہونے والا ہے کیونکہ لگتا ایسا ہے کہ اب سیاست مزید سیاہ ہونے جا رہی ہے۔۔۔۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *