امریکہ میں عراقی اور شامی تارکین وطن پر پابندیوں کا بل منظور

امریکی ایوان نmigrantsمائندگان نے سکیورٹی خدشات پر شام اور عراق کے تارکین وطن کی امریکہ میں آبادکاری پر پابندیوں کا بل منظور کیا ہے۔وہائٹ ہائس کی مخالفت کے باوجود یہ بل اکثریتِ رائے سے منطور کیا گیا۔اس بل کے حق میں 289 ووٹ جبکہ مخالفت میں 137 ووٹ پڑے جبکہ امریکی صدر براک اوباما کے مطابق وہ تارکین وطن کو روکنے کے لیے کی جانے والی قانونی سازی کو ویٹو کر دیں گے۔ابھی ارکانِ سنیٹ نے بھی اس بل پر اپنا حقِ رائے دہی استعمال کرنا ہے۔گذشتہ جمعے کو پیرس میں حملوں کے بعد ایک درجن سے زیادہ ریاستوں کے گورنروں نے سکیورٹی خدشات پیش نظر پہلے ہی کہہ رکھا ہے کہ وہ شامی پناہ گزینوں کو اپنے یہاں داخل نہیں ہونے دیں گے۔یوان نمائندگان میں اکثریتی جماعت رپبلکن کے رہنما کیون میکارتھی کے مطابق’ انھوں نے اس بل کی حمایت اس وجہ سے کی ہے کہ کیونکہ یہ ہماری قوم کے اقدار کے خلاف ہے اور ایک آزاد معاشرے کے خلاف ہے کہ شدت پسند گروہوں کو وہ موقع دیا جائے جس کو حاصل کرنا چاہتے ہیں۔کانگریس میں موجود اور سنہ 2016 کے لیے صدارت کے امیدوار رپبلکن رہنماؤں نے شامی پناہ گزینوں کے لیے امریکی سرحدوں کو بند کرنے کی بات کہی تھی لیکن اوباما انتظامیہ شام کے 10 ہزار مزید پناہ گزینوں کو اپنے ملک میں رہنے کی اجازت دینے کے فیصلے پر قائم ہے۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *