سیاحوں کا انتخاب

swatمتعدد خوبصورت علاقوں پر مشتمل وادی سوات ہر سال گرمیوں میں سیاحوں کی ایک بڑی تعداد کو اپنی جانب کھینچتی ہے۔ اس موقع پر سیاح قدرتی خوبصورتی کے ساتھ ساتھ خوبصورت موسم کے مزے لوٹتے ہیں اور پرسکون ماحول سے بھی لطف اندوز ہوتے ہیں۔ تاہم، سردیوں میں یہ وادی موسم سرما کے کھیلوں اور برف باری کے شوقین افراد کے لیے کچھ زیادہ ہیں پرکشش بن جاتی ہے۔ برف باری اور موسم سرما میں سیاحت کے لیے وادی کے پرکشش مقامات میں مالم جبہ،میاندم اور کالام شامل ہیں ۔ مالم جبہ سطح سمندر سے نو ہزار فٹ کی بلندی پر واقع ہے اور یہاں برف باری کا آغاز نومبر میں ہوتا ہے جس کے بعد یہ علاقہ سفید رنگ کی چادر اوڑھ لیتا ہے۔

swat0یہ ملک کا واحد علاقہ ہے جو کہ اسکی کے کھیل کے شوقین کے عام افراد کے لیے بھی کھلا رہتا ہے۔یہاں اسکی کے لیے تقریباً 800 میٹر کی ڈھلوان ہے اور یہاں اس کھیل کو سیکھنے والوں کے لیے باقاعدہ ٹریننگ کیمپس بھی لگائے جاتے ہیں۔ وادی میاندم کوہ ہندوکش میں واقع ہے اور مینگورہ کے مرکزی شہر سوات سے تقریباً 40 کلومیٹر کے فاصلے پر واقع ہے۔اس وادی تک کسی بھی موسم میں باآسانی پہنچا جا سکتا ہے اور موسم سرما اور گرما دونوں میں سیاح بڑی تعداد میں یہاں کا رخ کرتے ہیں۔ گھنے جنگلات میں گھری یہ وادی بھی موسم سرما میں برف کی موٹی چادر اوڑھ لیتی ہے۔ کالام وادی سوات کا ایک خوبصورت گاؤں ہے جو دریائے سوات کے کنارے واقع ہے۔ یہ سطح سمندر سے اس کی بلندی 6,800 فٹ ایک مشہور سیاحتی مقام ہے ۔ یہاں سیاحوں کے لیے کافی تعداد میں قیام گاہیں اور مہمان خانے موجود ہیں۔

swat1

ادی کالام سے دریائے سوات کا خوبصورت منظر

swat2

کالام میں برف باری کے بعد بچے خوشی منا رہے ہیں کالام میں بھی سردیوں میں شدید سردی اور برف باری ہوتی ہے۔

swat3

مالم جبہ میں اسکی کے لیے موجود ڈھلوان جہاں اس کھیل کے شوقین افراد کے لیے تربیتی کیمپ بھی لگائے جاتے ہیں

swat4

مالم جبہ میں اسکی کے شوقین افراد کی کثیرتعداد موجود ہے

swat5

پاکستان کے مشہورسیاحتی مقام وادی کالام کا خوبصورت نظارہ

swat6

ایک سیاح مقامی ٹرینر سے اسکی کی تربیت حاصل کر رہی ہیں

بشکریہ فضل حق

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *