سانحہ ماڈل ٹاﺅن کا کیس فوجی عدالت میں چلایا جائے : طاہر القادری

tahir ul qadri پاکستان عوامی تحریک کے سربراہ ڈاکٹر طاہرالقادری کا کہنا ہے کہ سانحہ ماڈل ٹاون میں 14 افراد کے قتل میں حکمران ملوث ہیں اوراگر انصاف نہ ملا تو رائیونڈ دور نہیں اس کی اینٹ سے اینٹ بجا دیں گے۔
لاہورمیں پاکستان عوامی تحریک کے کارکنان سے خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹرطاہرالقادری کا کہنا تھا کہ ماڈل ٹاون سانحے میں قتل ہونے والے 14 افراد کا مقدمہ حکمرانوں پر چلایا جائے اور اس کیس پر فوجی عدالت میں کیس چلنا چاہئے، ہم کسی سے کچھ بھی نہیں مانگتے صرف ماڈل ٹاو¿ن کے معصوم 14 شہریوں کے قتل میں ملوث ملزما ن کو کیفرکردار تک پہنچایا جائے۔ ان کا کہنا تھا کہ کیس میں ہمارے مظلوموں اور گواہوں پر فرد جرم لگوا دی گئی، واقعے میں 14 لاشیں گرانے والے دہشت گرد حکمران ہیں جو اسلام آباد میں بیٹھے ہیں اس لئے ان خلاف مقدمہ چلایا جائے اور حکمرانوں کے رویئے سے لگتا ہے کہ وہ اسلام آباد میں ایک بار پھر دھرنا چاہتے ہیں۔
سربراہ عوامی تحریک نے کہا کہ پورے ملک میں دہشت گردی کا مرکز پنجاب ہے اور دہشت گردوں کا جنم بھی یہیں ہوتا ہے اور یہیں ان کو پناہیں بھی دی جاتی ہیں، اگر دہشت گردی کو ختم کرنا ہے تو ظالم حکمرانوں کا خاتمہ ضروری ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ میرے ساتھ ڈیل کرنے کی جرات کسی میں نہیں اور نہ ہی مجھے خریدا جاسکتا ہے، کرپشن کے سوا حکمرانوں کا کوئی ایجنڈا نہیں ہے لیکن کرپشن کے خلاف ہماری جنگ جاری رہے گی ہم علم کے ذریعے لوگوں میں شعور اجاگر کریں گے۔ طاہر القادری نے کہا کہ ملک میں سیاسی دہشت گردی ہورہی ہے اور الیکشن کمیشن سیاسی دہشت گردی میں شامل ہے ملک کی ایسی سرپرستی نہیں ہورہی جس طرح قائد اعظم چاہتے تھے۔

سانحہ ماڈل ٹاﺅن کا کیس فوجی عدالت میں چلایا جائے : طاہر القادری” پر بصرے

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *