گدھے غائب' کھالیں برآمد ... اور گوشت؟

جس طرح سے گدھے کے سر سے سینگ غائب ہوگئے اس طرح تین سال کے دوران ملک بھر میں گدھے بھی غائب ہونا شروع ہو گئے ۔ گدھوں کی کھالیں برآمد کرلی گئیں لیکن گوشت کا کچھ نہ پتہ چل سکا۔ وفاقی وزیر تجارت خرم دستگیر کے قومی اسمبلی میں گدھوں کی کھالوں کی برآمدگی کے اعداد و شمار سے متعلق تحریری جواب میں بتایا گیا ہے کہ کھالیں حاصل کرنے کیلئے ہر سال 70 ہزار گدھوں کو مار دیا جاتا ہے اور گزشتہ تین سالوں کے دوران ملک بھر میں 2 لاکھ گدھوں کو مار کر ایک لاکھ 99 ہزار 660 کھالیں برآمد کی گئیں لیکن ان گدھوں کے گوشت کی تلفی کا کوئی ریکارڈ بھی موجود نہیں میڈیا رپورٹس کے مطابق تحریری جواب میں مزید بتایا گیا کہ گزشتہ تین سالوں کے دوران گھوڑوں کی 6 ہزار 950 کھالیں بھی برآمد کی گئیں۔لیکن کسی نے بھی یہ نہیں پوچھا کہ گدھوں کا گوشت کہاں گیا۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *