خطے میں امن کے لیے مسئلہ کشمیر کا حل ضروری ہے: وزیراعظم

 nawazوزیراعظم میاں محمد نواز شریف نے کہا ہے کہ مسئلہ کمشیر کے حل کے بغیر خطے کی کشمکش اور بے یقینی ختم نہیں ہوسکتی۔انہوں نے ان خیالات کا اظہار آج پانچ فروری کو کشمیر ڈے کے موقع پر آزاد جموں کشمیر کی قانون ساز اسمبلی سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔اس موقع پر نواز شریف نے کشمیر کی آزادی کے لیے جدوجہد کرنے والے شہداء کو بھی سلام پیش کیا۔نواز شریف کا کہنا تھا کہ لائن آف کنٹرول کے ذریعے تجارت کے فروغ کا مقصد خطے میں امن کی کوششوں کو تقویت دینا اور کے روابط کو مزید مستحکم کرنا ہے۔
وزیراعظم نواز شریف جب آزاد کشمیر پہنچے تو ان کا والہانہ استقبال کیا گیا اور پولیس کے چاق و چوبند دستے نے سلامی بھی دی۔
دوسری جانب پاکستان بھر میں آج کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کے لیے کشمیر ڈے منایا جارہا ہے اور اس موقع پر مقبوضہ کشمیر پر ہندوستان کے قبضے کے خلاف ملک کے مختلف شہروں میں جلسے اور تقاریب منعقد کی جارہی ہیں۔
پاکستان میں کشمیر ڈے ہر سال پانچ فروری کو منایا جاتا ہے جس کا آغاز 1990ء سے ہوا۔ پانچ فروری کو قومی دن حثیت حاصل ہے۔اس دن کو منانے کا مقصد کشمیر پر بھارتی فوج کے تسلط کے خلاف آواز بلند کرنا ہے۔
یاد رہے کہ گزشتہ روز قومی اسمبلی میں منگل کو کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کے لیے ایک قرارداد متفقہ طور پر منظور کی گئی۔قرارداد میں ہندوستان کو کشمیریوں کے انسانی حقوق کے احترام، شہری علاقوں سے فوج کی واپسی، کشمیری سیاسی رہنماؤں کی رہائی، اور فوج کے خصوصی اختیارات جیسے سخت قوانین منسوخ کرنے پر بھی زور دیا گیا۔قرارداد میں پاکستان کے ساتھ مسئلہ کشمیر پر بامعنی مذاکرات شروع کرنے کا مطالبہ بھی کیا گیا۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *