سونے سے پہلے موبائل فون مت استعمال کریں، رپورٹ آگئی

mobile

آجکل کے بچے اور نو عمر رات کے وقت لیٹ کر موبائل فون اور اس سے ملتے جلتے الیکٹرانک آلات کا استعمال کرتے ہیں جو ان کی صحت کے ساتھ ساتھ سکول اور کالج میں پرفارمنس پر بھی منفی اثرات مرتب کرتے ہیں ۔ حال ہی میں کی جانے والی تحقیق کے مطابق جو بچے یا نو عمر رات کے وقت سونے سے قبل دیر تک سمارٹ فون یا ٹیبلٹ کا استعمال کرتے ہیں سکول میں انکے گریڈز روز بروز نیچے آنے لگتے ہیں ۔ امریکہ کی رٹگرز یونیورسٹی کے محققین کی جانب سے حال ہی میں نیو جرسی کے تین سکولوں کا سروے کیا گیا ۔ سروے کے اعدادو شمار کے مطابق یہ بات سامنے آئی کہ جو بچے رات کو لائٹ بند کرنے کے بعد سمارٹ فونز اور دیگر آلات کے زریعے پیغامات بھیجتے ہیں انکی پر فارمنس جلتی لائٹ میں میسج کرنے والوں کے مقابلے میں ذیادہ متاثر ہوتی ہے ۔محققین کا کہنا ہے کہ جو بچے سونے سے قبل جلتی لائٹ میں 30منٹ تک سمارٹ فونز کا استعمال کرتے ہیں انکی پر فارمنس متاثر نہیں ہوتی ۔ تاہم جو بچے لائٹ بند کرکے 30منٹ سے زائد وقت تک ان آلات کا استعمال کرتے ہیں انکی پرفارمنس بڑی حد تک متاثر ہو تی ہے ۔ انکا کہنا ہے کہ جو بچے رات کو دیر تک میسج کرتے رہتے ہیں وہ کم وقت کیلئے سوتے ہیں جس کی وجہ سے وہ صبح پڑھائی کے وقت سستی کا شکار ہوتے ہیں اور پڑھائی میں بہت پیچھے رہ جاتے ہیں ۔ اس کے ساتھ دن بھر انکی طبیعت بوجھل رہتی ہے جس کی وجہ سے وہ روز مرہ کی دوسری مصروفیات میں بھی کم دلچسپی لیتے ہیں ۔رٹگرز یونیورسٹی کی پروفیسر یو منگ کا کہنا ہے کہ جو طالب علم رات کو دیر سے سوتے اور صبح دیر سے اٹھتے ہیں وہ قدرت کے قانون کے بر عکس چلنے کی کو شش کرتے ہیں جو انکی صحت پر منفی اثرات مرتب کر تا ہے ۔منگ کا کہنا ہے کہ لڑکوں کے مقابلے میں لڑکیاں رات کو میسج کرنے سے کم متاثر ہوتی ہیں ۔ انکا کہنا ہے چونکہ لڑکیاں عموما لائٹ جلا کر ہی ایسے آلات کا استعمال کرتی ہیں جس کی وجہ سے سمارٹ فون کی نیلی روشنی انھیں کم متاثر کرتی ہے ۔بیشتر لڑکے رات کے وقت لائٹ بند کر کے موبائل فون کا استعمال کرتے ہیں اور اندھیرے میں سمارٹ فونز یا ٹیبلٹس کی نیلی روشنی اور ذیادہ تیز ہو جاتی ہے حتی کی آنکھیں بند کرنے پر بھی آنکھوں میں چھبتی ہوئی محسوس ہوتی ہے ۔ علا وہ ازیں کم سونے کی وجہ سے میلاٹونن نامی ہارمون کا اخراج بھی بڑی حد تک کم ہوجاتا ہے جس سے نیند بہت حد تک متاثر ہوتی ہے ۔ انکا کہنا ہے کہ نو عمروں میں سوتے ہوئے ریپڈ آئی موومنٹ بہت اہمیت کی حامل ہے لہذا جب کم سونے سے اس کا دورانیہ کم ہو گا تو وہ انکی یاداشت اور سیکھنے کی صلاحیت کا متاثر ہونا لازمی امر ہے ۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *