صحت مند دانت، فالج سے بچانے میں مددگار

Teeth

منہ یا دانتوں کی خراب صحت فالج جیسے مرض کا خطرہ بڑھا دیتی ہے۔ یہ بات امریکا میں ہونے والی ایک نئی طبی تحقیق میں سامنے آئی۔ لوئیز ویل یونیورسٹی کی تحقیق میں ایک فرد کی منہ کی صحت اور فالج کے خطرے کے حوالے سے جائزہ لیا گیا۔ محققین نے ہسپتالوں میں فالج کے شکار افراد کا جائزہ لیا اور منہ میں پائے جانے والے بیکٹریا سے اس کے تعلق کو دریافت کرنے کی کوشش کی۔ نتائج سے معلوم ہوا کہ فالج کی ایک قسم برین ہیمرج کا شکار ہونے والے ایک چوتھائی افراد کے لعاب دہن میں ایک بیٹریا streptococcus کو پایا گیا۔ فالج کی دوسری قسم کے شکار صرف 6 فیصد افراد میں منہ کے اس بیکٹریا کو دیکھا گیا۔ محققین کا ماننا ہے کہ یہ بیکٹریا خون کی شریانوں کو عمر بڑھنے کے ساتھ کمزور کردیتا ہے جس کے نتیجے میں دماغ میں شریانوں کے پھٹنے کا عمل شروع ہوجاتا ہے جو سنگین ہونے پر برین ہیمرج کی شکل میں سامنے آتا ہے۔ یہ بیکٹریا دنیا بھر میں 10 فیصد افراد میں پایا جاتا ہے اور اکثر دانتوں کو کمزور کرنے کا باعث بنتا ہے۔ محققین کا کہنا ہے کہ نتائج سے معلوم ہوتا ہے کہ منہ کی صحت دماغی صحت کے لیے بہت ضروری ہے، لوگوں کو دل اور دماغ کے ساتھ ساتھ اپنے دانتوں کا بھی خیال رکھنا چاہئے :-

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *