بندھے ہوئے ہاتھ اور پاؤں کے ساتھ پانی میں ڈوبنے سے کیسے بچا جا سکتا ہے

Henr

اگر آپ کو ایسی صورتحال درپیش ہو جس میں آپ کے ہاتھ پاؤں باندھ کر پانی میں پھینک دیا جائے اور موت یقینی نظر آنے لگے تو ذیل میں بتائی گئی چیزوں پر عمل کریں اور اپنی جان بچالیں۔یہ تمام باتیں امریکی بحریہ کے سابق فوجی کلنٹ ایمرسن کا کہنا ہے کہ فوج میں ایسی ٹریننگ دی جاتی ہے جس میں فوجیوں کے ہاتھ اور پاؤں باندھ کر انہیں گہرے پانیوں میں پھینک دیا جاتا ہے لیکن ان کی ٹریننگ اس طرح کی جاتی ہے کہ وہ خود ہی اپنے آپ کو آزاد کرواکر پانی سے باہر نکلتے ہیں۔اس کا کہنا ہے کہ پانی میں زندہ رہنے کے لئے سب سے زیادہ جس چیز کی ضرورت ہوتی ہے وہ سانس پر کنٹرول ہے اور جو انسان جتنا زیادہ دیر سانس روک کررکھ سکتا ہے وہ اتنا ہی بہتر سمجھا جاتا ہے۔اس کا کہنا تھا کہ لمبے سانس کھینچنے اور تیزی سے سانس خارج کرنے سے سانس پر کنٹرول رکھنے میں خاطر خواہ مدد ملتی ہے۔ایک مثال دیتے ہوئے ایمرسن نے کہا کہ اگرآپ کو ہاتھ باندھ کر پانی میں پھینک دیا گیا ہے اور آپ ڈوب رہے ہیں تو اندرکی جانب سانس ہرگز مت لیں بلکہ سانس کو روک لیں اور نیچے کی جانب تیزی سے جائیں اور فرش پر پاؤں رکھتے ہی اوپر کی جانب زورلگائیں اور سطح سمندر پر آتے ہوئے سانس کو تیزی سے اندر کی طرف کھینچیں لیکن سانس لمبی لیں۔ایک اور مثال میں اس کا کہنا تھا کہ اگر پانی گہرا ہوتو اپنے گٹنوں کو موڑیں اور منہ کو پانی میں رکھتے ہوئے سانس کو باہر نکالیں اور پھر یکدم اپنے جسم کو اس طرح سیدھا کریں پیٹ اور نچلا دھڑ پانی میں ہو اور آپ کا منہ باہر نکل آئے اورآپ سانس لے سکیں۔زیر نظر تصویر میں آپ پر یہ پوزیشن مزید واضح ہوجائے گی۔اگر کنارہ قریب ہوتو گٹنوں کو موڑیں اور منہ پانی میں رکھتے ہوئے سانس باہر نکالیں ۔اب اپنی پاؤں کو سیدھا کریں اور کندھوں کو اس طرح رکھیں کہ وہ چپو کا کام کرتے ہوئے آپ کو کنارے کی جانب دھکیل سکیں۔ان طریقوں کو سیکھتے ہوئے آپ پانی میں ہاتھ پاؤں بندھے ہونے کے باوجود مدد آنے تک زندہ رہ سکتے ہیں:۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *