دیپالپور پریمیئر کرکٹ لیگ کا رنگا رنگ آغاز

Dp

دیپالپور پریمیئر کرکٹ لیگ کا رنگا رنگ تقریب میں آغاز ہوگیا۔ ٹورنامنٹ کا افتتاح پاکستان کے مایہ ناز فاسٹ بولر محمد عرفان اور عمران نذیر کے ہاتھوں ہوا۔ اس موقع پر وفاقی وزیربرائے صنعت و پیدا وار راﺅ اجمل خاں اورممبر قومی اسمبلی ریاض الحق جج سمیت ہزاروں کی تعداد میں شائقین موجود تھے۔پہلے روز چار میچز کھیلے گئے ۔ دیپالپور قلندرز کی ٹیم نے اپنے دونوں میچز جیت لیے جبکہ جوئیہ یونائیٹڈ کو دونوں میں شکست کا صدمہ برداشت کرنا پڑا، پٹھان زلمی اور دیپالپور تھنڈرز نے دو میں سے ایک، ایک کامیابی حاصل کی۔اس سے قبل تقریب کا باقاعدہ آغاز تلاوت کلام پاک سے ہوا، بعدمیں الائیڈ سکول کے ننھے بچوں نے خوبصورت پرفارم سے سماں باندھ دیا۔ مقامی فنکاروں کی جانب سے پنجابی گانوں پررقص اور آتش بازی کے خوبصورت مظاہرے نے بھی تقریب کو چار چاند لگا ئے ۔ٹیسٹ کرکٹر محمد عرفان دیپالپور تھنڈرز اور عمران نذیر پشاور زلمی کی کٹ پہن کر میدان میں اترے۔سابق ٹیسٹ اوپنر نے طویل الاقدامت پیسر کی جانب سے کرائی گئی گیند کو آہستی کے ساتھ کھیل کرمقابلوں کا آغاز کیا۔
دونوں کرکٹرز جب گراﺅنڈ آئے تو شائقین کی بڑی تعداد بھی زبردستی اندر گھس آئی جس کی وجہ سے بدنظمی پید اہوگئی، میچ دیکھنے کے لیے آنے والے اکثر نوجوانوں کی خواہش تھی کہ وہ سٹار کھلاڑیوں کے ساتھ سیلفی لیں ۔ پولیس اور دیگر سیکیورٹی اہلکاروں نے موقع کی نزاکت کو سمجھتے ہوئے فوری ایکشن لیا اور شائقین کو باہر نکال دیا۔ اس کے بعد جب دونوں کرکٹرز سڑھیوں کے ذریعے سٹیج کی جانب بڑھے تو ایک بار پھر دونوں کو سخت مشکلات کا سامنا کرنا پڑا۔ اس کے بعد محمد عرفان اور عمران نذیر تھوڑی دیرسٹیج پر بیٹھے پھر روانہ ہوگئے۔
بعدازاں ٹورنامنٹ کا پہلا میچ پٹھان زلمی اور دیپالپور تھنڈرز کے مابین کھیلا گیا۔ تھنڈرز نے پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے مقررہ چھ اوورز میں 153 رنز جڑے، مین آف دی میچ تیمور نے شاندار بیٹنگ کا مظاہرہ کرتے ہوئے 61 رنز کی ناقابل شکست اننگز کھیلی۔ وسیم 32رنز بنانے کے بعد آﺅٹ ہوگئے۔جواب میں پٹھان زلمی کے بیٹسمین خاطر خواہ کارکردگی کا مظاہرہ نہ کرسکے اور 83 رنز تک ہی پہنچ سکی، علی موچی نے عمدہ بولنگ کا مظاہرہ کرتے ہوئے دو وکٹیں اپنے نام کیں۔دوسرے میچ میں دیپالپور قلندرز اور جوئیہ یونائیٹڈ کی ٹیمیں مدمقابل آئیں جس میں تھنڈرز نے بلال کے آل راﺅنڈ کھیل کی بدولت 31 رنز سے کامیابی حاصل کی۔ فاتح سائیڈ نے 6 وکٹوں کے نقصان پر 79 رنز بنائے، بلال32 رنز کے ساتھ نمایاں رہے۔ جواب میں جوئیہ یونائیٹڈ کی ٹیم 7 وکٹوں پر 48 رنز تک ہی پہنچ سکی۔ بلال نے شاندار بولنگ کا مظاہرہ کرتے ہوئے چار وکٹیں اپنے نام کیں۔
ٹورنامنٹ کے پہلے روز کھیلے جانے والے تیسرے مقابلے میں دیپالپور قلندرز نے شاندار کارکردگی کے تسلسل کو برقرار رکھتے ہوئے زلمی کے خلاف 153 رنز کا مجموعہ ترتیب دینے والی دیپالپور تھنڈرز کی ٹیم کو 10 وکٹ سے آﺅٹ کلاس کردیا۔ناکام ٹیم پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے صرف 47 رنز تک ہی پہنچ سکی۔ فاتح سائیڈ نے ہدف بلال کے ناقابل شکست 35 رنز کی بدولت تیسرے ہی اوور میں حاصل کرلیا۔ بلال مسلسل دوسری بار مین آف دی میچ قرار پائے۔ پہلے دن کے آخری میچ میں پشاور زلمی نے جوئیہ یونائیٹڈ کو آسان مقابلے میں ہرا کر پہلی کامیابی حاصل کرلی۔

source:okara.sujag.org

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *