کوہاٹ میں طلبہ کھلے آسمان تلے تعلیم حاصل کرنے پر مجبور

bashir ahmed

کوہاٹ(بشیر احمد سے )شکردرہ گورنمنٹ پرایمری سکول نمبر۳میں کمروں کی خستہ حالی،معصوم طلبہ کھلے آسمان تلے تعلیم حاصل کرنے پر مجبور ہیں اعلی حکام تک بارہا ہ فریاد پہنچائی مگر کوئی ٹس سے مس نہیں ہوتا ،2005 کے زلزلے میں کمروں کو نقصان پہنچا تھا مگر تاحال تعمیر نہیں ہوئی ،ای ڈی او ایجوکشن نے کمروں میں طلبہ نہ بیٹھانے کی حکم پر جان خلاصی کرلی سکول میں کمروں کی تعمیر کو یقنی بنایا جائے کسی بھی جانی نقصان کی صورت میں ای ڈی ایجوکشن پرزمہ داری عاید ہوگی۔تفصیلات کے مطابق گورنمنٹ پرایمری سکول نمبر۳ میں کمروں کی خستہ حالی کی وجہ سے کلاس ادنی اوراول اعلی کے معصوم طلبہ کھلے آسمان تلے بیٹھنے پر مجبور ہیں -

school

کمروں میں داڑیں پڑنے کی وجہ کمرے کسی بھی وقت مہندم ہوسکتے ہیں اس سلسلے میں نایب ناظم ویلج کونسل زیارت آباد اور سکول کے پی ٹی اے چیرمین زرگل نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ سکول کے کمروں کو2005کے زلزے میں نقصان پہنچا تھا مگر تاحال کسی قسم کی تعمیر دیکھنے میں نہیں آتی انھوں نے کہا کہ کمروں کی خستہ حالی کے سلسلے میں بارہاہ ضلعی انتظامیہ تک فریاد پہنچائی مگر کوئی ٹس مس نہیں ہوتا اور ای ڈی ایجوکشن نے کمروں کی تعمیر کا بندو بست کرنے کے بجائے طلبہ کوکمروں میں نہ بیٹھانے کی احکامات جاری کرکے جان خلاصی کی جس کی وجہ سے معصوم طلبہ کھلے آسمان تلے تعلیم حاصل کرنے پر مجبور ہیں انھوں نے مطالبہ کرتے ہوئے کہاکہ کسی گورنمنٹ پرایمری سکول نمبر ۳ میں کمروں کی تعمیر یقنی بنائی جائے بصورت دیگر معصوم طلبہ کو پہنچانے والے کسی بھی نقصان کی زمہ داری محکمہ تعلیم کی ضلعی انتظامیہ پر عائد ہوگی-

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *