یونس خان کی معافی اور پی سی بی کا شوکازنوٹس

Yonus Khan

لاہور -پاکستان کرکٹ بورڈ  نے یونس خان کو معاہدے کی شقوں کی خلاف ورزی پر شوکاز نوٹس جاری کرتے ہوئے پاکستان کپ میں شرکت سے روک دیا۔ پی سی بی کی جانب سے جاری اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ یونس خان نے پاکستان کپ میں امپائرنگ پر اعتراض کیا لیکن میچ ریفری کی جانب سے نوٹس جاری کرنے پر اس کو وصول کرنے سے انکار کرتے ہوئے احتجاجی طور پر ٹورنامنٹ ادھورا چھوڑ کر چلے گئے۔ فیصل آباد میں جاری پاکستان کپ میں یونس خان خیبر پختونخوا ٹیم کی قیادت کررہے تھے جہاں اپنے پہلے میچ میں حریف ٹیم اسلام آباد کے کپتان مصباح الحق کو آؤٹ قرار نہیں دینے پر ناقص امپائرنگ کی نشاندہی کی تھی جبکہ دوسرے میچ میں پنجاب کے خلاف دو رنز سے کامیابی کے باوجود اعتراض کیا تھا۔ میچ ریفری نے امپائرکی شکایت پر یونس خان کو نوٹس جاری کیا تھا لیکن وہ پیش نہیں ہوئے جبکہ میچ ریفری نے انھیں میچ فیس کا 50 فی صد جرمانہ کردیا جس کے بعد وہ احتجاجاً ٹورنامنٹ چھوڑ کر کراچی واپس آگئے تھے۔  پی سی بی کے مطابق یونس خان نے بورڈ کے چیئرمین شہریارخان سے فون پر بات کی اور اپنے رویے پر معافی مانگی اور پاکستان کپ میں خیبرپختونخوا کی دوبارہ نمائندگی کرنے کی اجازت طلب کی تھی۔ بورڈ کے اعلامیے کے مطابق یونس کے متبادل کے طورپر دوسرے کھلاڑی کو کے پی کے ٹیم میں شامل کیا گیا ہے اور کھیل کے مفاد کی خاطر یہ فیصلہ کیا گیا ہے کہ ان کو ٹیم میں شامل ہونے کی اجازت نہیں ہوگی۔ جبکہ معاہدے کی خلاف ورزی پر شوکاز نوٹس جاری کرتے ہوئے سات روز کے اندر وضاحت کرنے کا حکم دیا گیا ہے۔ پی سی بی چیئرمین شہریارخان نے کہا کہ 'یونس نے پاکستان کرکٹ کے لیے عظیم خدمات دی ہیں اور نوجوانوں کے لیے حقیقی رول ماڈل ہیں لیکن یہ فیصلہ بڑی دردمندی سے کیا کیونکہ گیم سے بڑھ کر کوئی نہیں ہے'۔ ان کا کہنا تھا کہ 'ہم اس معاملے کو مزید آگے بڑھانے سے پہلے یونس خان کے جواب کا انتظار کریں گے :-

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *