سوپ اورملک شیک ذیابیطس کے خلاف مددگار

Diabetic

جسمانی وزن میں 10 فیصد کمی ذیابیطس کے مرض میں مبتلا ہونے کا خطرہ 90 فیصد تک کم کردیتا ہے۔ یہ بات آسٹریلیا میں ہونے والی ایک طبی تحقیق میں سامنے آئی۔ سڈنی یونیورسٹی کی تحقیق میں بتایا گیا ہے کہ غذا پر سخت کنٹرول کے ذریعے ذیابیطس ٹائپ ٹو کے مرض کے خطرے میں نمایاں کمی لائی جاسکتی ہے۔ تحقیق کے مطابق سوپ اور ملک شیک وغیرہ پر مبنی غذائی مینیو کو کچھ ہفتے اپنا کر یہ فائدہ حاصل کیا جاسکتا ہے۔ برطانیہ، ڈنمارک، فن لینڈ، ہالینڈ، بلغاریہ، اسپین، نیوزی لینڈ اور آسٹریلیا میں ہونے والی اس تحقیق کے دوران ذیابیطس ٹائپ ٹو کی روک تھام کے لیے بہترین طریقے کو تلاش کرنے کا کام کیا گیا۔

ذیابیطس سے قبل کی علامات میں شکار 2300 رضاکاروں پر اس حوالے سے 2014 میں تحقیق کا آغاز کیا گیا اور انہیں 8 ہفتے تک سوپ اور ملک شیک پر مشتمل 800 کیلوریز کی غذا کا 8 ہفتے تک استعمال کرایا گیا۔  ابتدائی نتائج سے معلوم ہوا کہ ان کے جسمانی وزن میں اوسطاً 11 فیصد تک کمی آئی ہے اور بلڈ گلوکوز لیول صحت مند سطح جبکہ ذیابیطس کی ممکنہ علامات ختم ہوگئیں۔ محققین کا کہنا ہے کہ جسمانی وزن میں جتنی کمی ہوگی ذیابیطس کا خطرہ اتنی زیادہ مدت کے لیے دور ہوجائے گا۔ یہ تحقیق یورپین اوبیسٹی سمٹ میں بدھ کو پیش کی گی :-

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *