اقدام قتل کا مقدمہ: سلمان خان پر فرد جرم عائد

aaaaa

بولی وڈ کے سپر سٹار سلمان خان پر 2002 کے ’ہٹ اینڈ رن’ کیس میں اقدام قتل کا مقدمہ چلانے کا حکم دے دیا گیا ہے اور جرم ثابت ہونے پر انہیں دس سال قید کی سزا کا سامنا ہوسکتا ہے۔

سلمان خان بدھ کو ممبئی کی عدالت میں پیش ہوئے جہاں ان پر فرد جرم عائد کی گئی۔

جس کے بعد سماعت انیس اگست تک کے لیے ملتوی کردی گئی تاہم بولی وڈ سپراسٹار کو حاضری سے استثنٰی دے دیا گیا۔

دبنگ خان نے سماعت کے دوران فرد جرم کو تسلیم کرنے سے انکار کیا۔

یا د رہے کہ اس برس جنوری میں مجسٹریٹ سطح کی ایک عدالت نے اپنے حکم میں کہا تھا کہ اس معاملے میں سلمان پر قتل کا مقدمہ چلانے کے لیے کافی ثبوت موجود ہیں۔

اسی نچلی عدالت کے حکم کو سلمان خان نے مارچ میں چیلنج کیا تھا لیکن گزشتہ دنوں ممبئی کی ایک عدالت نے ان کی اس اپیل کو مسترد کر دیا۔

سینتالیس سالہ اداکار پر اس سے پہلے لاپرواہی سے گاڑی چلانے کا مقدمہ درج کیا گیا تھا جس میں زیادہ سے زیادہ دو سال کی سزا ہوسکتی تھی۔

لیکن بعد میں مجسٹریٹ عدالت نے اپنے حکم میں کہا کہ سلمان پر غیر ارادتاً قتل کا مقدمہ چلانے کے لیے کافی ثبوت ہیں۔

خیال رہے کہ اٹھائیس ستمبر 2002 کو ایک لینڈ کروزر کار ممبئی کے باندرہ علاقے میں ایک بیکری کے باہر واقع فٹ پاتھ پر سو رہے لوگوں پر چڑھ گئی تھی۔

اس حادثے میں ایک شخص کی موت ہوگئی تھی اور چار دیگر زخمی ہو گئے تھے جبکہ اس کار کو مبینہ طور پر سلمان خان چلا رہے تھے۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *