شمالی وزیرستان میں آپریشن ’ضربِ عضب‘ شروع، فیصلہ کن جنگ لڑیں گے؛ وزیر دفاع

operationپاک فوج کا کہنا ہے کہ حکومت کی ہدایت پر ملک کے قبائلی علاقے شمالی وزیرستان میں فوجی کارروائی کا آغاز کر دیا گیا ہے۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ آئی ایس پی آر کی جانب سے جاری کردہ بیان میں کہا گیا ہے کہ اس فوجی آپریشن کا نام ’ضربِ عضب‘ رکھا گیا ہے۔

دوسری جانب وزیر دفاع خواجہ آصف نے ایک نجی ٹی وی چینل سے بات کرتے ہوئے کہا کہ طالبان نے مذاکرات کے تقدس کو پامال کیا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ شمالی وزیرستان میں فوجی آپریشن کا فیصلہ بہت سوچ سمجھ کر کیا گیا ہے اورہم فیصلہ کن جنگ لڑیں گے۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ حکومت کی ہدایت پر شمالی وزیرستان میں مقامی اور غیر ملکی شدت پسندوں کے خلاف جامع فوجی آپریشن کا آغاز کر دیا گیا ہے۔

بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ دہشت گردی کے واقعات میں بھاری جانی و مالی نقصان ہوا ہے۔ دہشت گردوں نے شمالی وزیرستان کو پناہ گاہ بنا کر ریاست کے خلاف جنگ شروع کر رکھی تھی اور دہشت گردوں نے شمالی وزیرستان میں زندگی مفلوج کر رکھی تھی۔

بیان کے مطابق فوج کو قانون نافذ کرنے والے اداروں اور عوام کی مکمل حمایت حاصل ہے۔ دہشت گرد قومی زندگی کو ہر لحاظ سے غیر مستحکم کر رہے ہیں۔

اس سے قبل پاک فوج نے کہا تھا کہ شمالی وزیرستان میں شدت پسندوں کے ٹھکانوں پر جنگی طیاروں سے بمباری کی گئی جس کے نتیجے میں کم سے کم 105 شدت پسندوں کی ہلاکت کی اطلاعات ہیں۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *